Ustad Imam Din Gujrati استاد امام دین گجراتی

Fictional Character

Imam Din Gujrati

استاد امام الدین:آپ کا اصل نام امام الدین
تھا تخلص استادتھاجوکہ ”استاداامام دین گجراتی“سے مشہور تھا۔


اُستاد امام دین گجراتی 1870ء میں پیدا ہوئے اور 22 فروری 1954ء کو وفات پائی۔ ان کا اصلی نام امام دین تھا۔ اپنی منفرد، طنزیہ اور عجیب و غریب طرز کی شاعری کی بناء پر اُستاد کہلاتے تھے جبکہ گجرات سے تعلق کی بناء پر اُستاد امام دین گجراتی کے نام سے مشہور ہو گئے۔ مجھے ٹیچر نہ سمجھو تم کسی اسکول یا کالج کافقط تخلص ہم جناب والا اُستاد رکھتے ہیں۔ اُستاد امام دین کی تعلیم پرائمری تھی اور وہ میونسپل کمیٹی میں محصول چونگی پر منشی گیری کرتے رہے۔ اپنی اٹھائیس سالہ ملازمت سے ریٹائرمنٹ کے بعداُنہوں نے سوختنی لکڑی کی فروخت کا کام شروع کر دیا تھا ۔ ہر چند فنِ شاعری سے نابلد تھے لیکن شاعری کے یہ کم تعلیم یافتہ پہلوان اپنے مقابلے میں اقبال اور غالب جیسے شاعروں کو بھی خاطر میں نہ لاتے تھے۔ یہی وجہ ہے کہ علامہ کی کتاب ”بانگ درا“ کے مقابلے میں اپنا شعری مجموعہ ”بانگ دہل“ میدان میں اُتار لیا